چیئرمین نیب کی مدت ملازمت میں توسیع کیلئے ایک اور آرڈیننس جاری ہونے والا ہے،تہلکہ خیز دعویٰ

پاکستان مسلم لیگ (ن)کے رہنما احسن اقبال نے کہاہے کہ چیئرمین نیب کی مدت ملازمت میں توسیع کے لیے صدارتی آرڈیننس فیکٹری سے ایک اور آرڈیننس جاری ہونے والا ہے،

احتساب بیورو کے چیئرمین اپنی نوکری پکی کرنے کیلئے جھوٹے اور من گھڑت کیسز بنارہے ہیں،نیب کا زور بس اپوزیشن اور عام آدمی پر چلتا ہے، جو ملک میں اپوزیشن کیساتھ بیٹھ کر بات نہیں کرسکتے وہ بھی طالبان

کو ساتھ لیکر چلنے کی بات کررہے ہیں۔اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج سید اصغر علی نے سابق وفاقی وزیر احسن اقبال سمیت دیگر کے خلاف نارووال سپورٹس کمپلیکس ریفرنس کیس کی سماعت کی۔ سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے لیگی رہنماو سابق وفاقی وزیر احسن اقبال حکومت اور نیب پربرس پڑے اور کہاکہ چھ ارب کے منصوبے کا الزام لگانے والے کو معلوم نہیں کہ نارووال

سپورٹس کمپلیکس ڈھائی ارب روپے میں مکمل ہوا۔ انہوں نے کہاکہ ریفرنس کی انکوائری کرنے والے تفتیشی افسر کو نوبل انعام ملنا چاہیے، انہوںنے کہاکہ نیب کا زور اپوزیشن اور عام آدمی پر چلتا ہے،نیب گردی کے بارے سرکاری افسران کو ہراساں کیا جارہاہے،عمران خان کے انتقام کی آگ کو بجھانے کے لیے جھوٹے کیسز بنائے جارہے ہیں۔ لیگی رہنما نے حکومت کو بھی ہدف تنقید کا نشانہ

بناتے ہوئے کہا کہ چیئرمین نیب کی مدت ملازمت میں توسیع کے لیے صدارتی آرڈیننس فیکٹری سے ایک اور آرڈیننس جاری ہونے والا ہے۔مسلم لیگ ن ایسے کسی آرڈیننس کو تسلیم نہیں کرتی۔ جو لوگ اپوزیشن کیساتھ بیٹھ کر بات نہیں کرسکتے وہ بھی طالبان کو ساتھ لیکر چلنے کی بات کررہے ہیں۔سابق وفاقی وزیر احسن اقبال نے کہاکہ نیب اور حکومتی پالیسیوں کے خلاف ترقی کا پہیہ رک گیا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *