300 ارب روپے کی لاگت سے ملک کی تیسری طویل ترین موٹر وے کی تعمیر کی منظوری دے دی گئی

وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ قومی اقتصادی کونسل کی ایگزیکٹیو کمیٹی (ایکنک)نے خیبرپختونخوا کے دو بڑے اور اہم منصوبوں کی باقاعدہ منظوری دے دی ہے۔ ان اہم منصوبوں کی ایکنک سے منظوری کو پورے صوبے باالخصوص جنوبی اضلاع، دیر اپر اور چترال کے عوام کیلئے بڑی خوشخبری قرار دیتے ہوئے اُنہوں نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے صوبے کے عوام کے

ساتھ کیا ہوا اپنا ایک اور وعدہ پورا کردیا۔اس سلسلے میں یہاں سے جاری اپنے ایک بیان میں وزیراعلیٰ نے کہا کہ 365 کلومیٹر لمبی پشاور ڈی آئی خان موٹر وے 300ارب روپے جبکہ 30 کلومیٹر دیر موٹر وے 40 ارب روپے کی تخمینہ لاگت سے مکمل کیا جائے گا اور ان منصوبوں کی تکمیل سے جنوبی اضلاع دیر اور چترال کے عوام کی تقدیر بدل جائے گی اور ان علاقوں میں ترقی کے نئے دور کا
آغاز ہو جائے گا۔ ان منصوبوں کو جنوبی اضلاع دیر اور چترال کی پائیدار بنیادوں پر ترقی کے لئے انتہائی اہمیت کا حامل قرار دیتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ ان منصوبوں کی تکمیل سے نہ صرف انہی علاقوں بلکہ پورے صوبے میں کاروباری، تجارتی، صنعتی اور سیاحتی سرگرمیوں کو فروغ ملے گا اور لوگوں کو روزگار کے نئے مواقع فراہم ہونگے۔ وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت صوبے

مختلف حصوں میں اکنامک زونز کے قیام اور ان اکنامک زونز کو شاہراہوں کے ذریعے ایک دوسرے سے منسلک کرنے کے لئے ایک جامع حکمت عملی کے تحت اقدامات اٹھا رہی ہے اور وہ دن دور نہیں جب صوبہ بین الاقوامی تجارت اور صنعتی سرگرمیوں کا مرکز بنے گا۔

ایکنک سے ان منصوبوں کی منظوری پر وزیراعلیٰ نے وزیراعظم عمران خان اور وفاقی وزیر اسد عمر کا خصوصی شکریہ ادا کیا ہے اور صوبے کے عوام کو مبارکباد دی۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *